پاکستان کے زیر انتظام قبائلی علاقے سے تعلق رکھنے والے کوچ عرفان محسود

349

ان سب بچوں کے خاندان پاکستان کے زیر انتظام قبائلی علاقوں سے تعلق رکھتے ہیں اور ان کے کوچ ہیں عرفان محسود۔ ’میں نے تمام ریکارڈ اپنے خرچ پر بنائے ہیں، کسی نے مجھے اسپانسر نہیں کیا اور نہ ہی حکومت کی جانب سے حوصلہ افزائی ہوئی ۔‘ یہ الفاظ ہیں 2009 میں، جنوبی وزیرستان سے نقل مکانی کر کے آنے والے نوجوان، محمد عرفان محسود کے، جن کے مارشل آرٹ کے شعبے میں 13ریکارڈ، گنزبک آف ورلڈ ریکارڈ میں شامل ہیں۔ وہ ڈیرہ اسماعیل خان میں ایک چھوٹی سی اکیڈمی بھی چلاتے ہیں۔ ان سب کی کہانیاں سننے کے لیے نیچے دیے گئے لنک کو کلک کریں۔

میری کہانی 2/14

ان سب بچوں کے خاندان پاکستان کے زیر انتظام قبائلی علاقوں سے تعلق رکھتے ہیں اور ان کے کوچ ہیں عرفان محسود۔ ’میں نے تمام ریکارڈ اپنے خرچ پر بنائے ہیں، کسی نے مجھے اسپانسر نہیں کیا اور نہ ہی حکومت کی جانب سے حوصلہ افزائی ہوئی ۔‘ یہ الفاظ ہیں 2009 میں، جنوبی وزیرستان سے نقل مکانی کر کے آنے والے نوجوان، محمد عرفان محسود کے، جن کے مارشل آرٹ کے شعبے میں 13ریکارڈ، گنزبک آف ورلڈ ریکارڈ میں شامل ہیں۔ وہ ڈیرہ اسماعیل خان میں ایک چھوٹی سی اکیڈمی بھی چلاتے ہیں۔ ان سب کی کہانیاں سننے کے لیے نیچے دیے گئے لنک کو کلک کریں۔https://www.urduvoa.com/a/4232215.htmlAwaz E Dost Meri Kahani

Posted by VOA Urdu on Wednesday, February 14, 2018